جتنے دوستوں کی ممبرشپ ری سٹور ہونی تھی ہو گئی اب مزید کسی کی ممبرشپ ری سٹور نہیں ہو گی. اب جس کو ممبرشپ چاہے اس کو فیس دینا ہو گی. پندرہ سو یا پندرہ ڈالر ایک سال کے لئے
Contact
[email protected]

اردو فنڈا کے بہترین سلسلے اور ہائی کلاس کہانیاں پڑھنے کے لئے ابھی پریمیم ممبرشپ حاصل کریں . نیا سلسلہ بستی بستی گاتا جائے بنجارا ایڈمن کے قلم سے

Results 1 to 9 of 9

Thread: فرار ( ایک انسیسٹ کہانی )

  1. #1
    Join Date
    Sep 2009
    Posts
    90
    Thanks Thanks Given 
    18
    Thanks Thanks Received 
    69
    Thanked in
    37 Posts
    Rep Power
    186

    Default فرار ( ایک انسیسٹ کہانی )





    فرار ( ایک انسیسٹ کہانی )


    امارت ایئرلائن کی فلائٹ دبئی سے لاہور کے ایئرپورٹ پر تھوڑی دیر میں لینڈ کرنے والی تھی



    فلائٹ کے سارے مسافر جہاز کے اتارنے سے پہلے اپنی اپنی چیزوں کو سمبالنے میں مصروف تھے

    جب کے اسی فلائٹ میں بٹھا ہوا 30 سالا محسن احمد اپنی آنکھیں بند کیے اپنی ہی سوچوں میں مگن تھا

    مجھے گھر سے بھاگے ہوئے آج تقریباً 20 سال ہو گے ہیں ، اور گھر سے بھاگ جانے کے بَعْد ، میں نے کبھی ایک دفعہ بھی اپنے ماں ، باپ اور اپنی چھوٹی بہن نور کی خبر نہیں لی ، اور نہ پتہ کیا، کے وہ اِس عرصے میں کیسے اور کس حال میں رہ رہے ہیں " اپنی آنکھوں کو بند کیے محسن کے دماغ میں یہ خیال ایا

    تو اس کی آنکھوں کے سامنے اس کے ابو کا چہرہ آ گیا . جن کی مار کے ڈر کی وجہ سے وہ آج سے 20 سال پہلے اپنے گھر سے بھاگ کر پہلے وہ ایک قریبی شہرملتان اور پِھر وہاں سے ٹرین کے ذرے کراچی آ گیا تھا

    محسن کا اصل تعلق ملتان کے قریب پنجاب کے ایک چھوٹے سے گاؤں سے تھا. جو کے ملتان شہر سے تقریبن دو گھنٹے کی دوری پر واقع تھا

    جب وہ تقریبن ١٠ سال کا تھا تو اس کے ابو نے ایک دن محسن کو ایک بہت ہی گندی حرکت کرتے رنگے ہاتھوں پار لیا تھا

    جس کے بعد مار مار کے اس کے ابو نے محسن کی ہڈیاں ہی توڑ دی تھیں

    اگر اس وقت محسن کی امی اسے بچانے کے لیے درمیاں میں نا آتی . تومحسن کے ابو تو اسے قتل بھی کرنے پر تل گے تھے

    محسن کی امی نے محسن کو اس وقعت ابو کی مار سے وقتی طور پر بچا تو لیا تھا . مگر محسن اپنے ابو کے غصے کو اچھی طرح جانتا تھا

    محسن یہ معلوم تھا کے اس کی گندی حرکت کی وجہ سے اس کے ابو کو اس پر بہت زیادہ غصہ ہے

    اور اِس وجہ سے ہو سکتا ہے کے رات کو سونے کے دوران اس کے ابو اسے قتل کر سکتے ہیں

    یہ ہی وجہ تھی . کے جیسے ہی اس رات سب گھر والے سونے کے لیے لیٹے . تو محسن چپکے سے اپنے بستر سے اٹھا اور گھر سے فرار ہو گیا

    گھر سے بھاگ جانے کے بَعْد محسن گاؤں سے ساری رات پیدل ہی چلتا ہوا ملتان اورپھر وہاں سے ٹرین میں سوار ہو کر سیدھا کراچی آن پھونچا

    کراچی میں 8 سال ادھر ادھر سڑکوں پر دھکے کہنے اور محنت مزدوری کرنے کے بَعْد محسن ایک ایجنٹ کے ذرھے بوٹ میں بیٹھ کر کراچی سے دبئی چلا گیا تھا . تو اس وقت وہ 18 سال کا ہو چکا تھا ‫

    گھر سے بھاگ جانے کی وجہ سے چونکہ محسن بچپن سے ہی محنت مزدوری میں لگ گیا تھا

    اِس لیے جوان ہوتے ہوتے اس کا جسم بہت مضبوط ہو گیا اور اس کا قد کھاٹ بھی کافی نکل ایا تھا

    ‫18 سال کی عمر میں ہی وہ ایک صحت مند جوان مرد بن چکا تھا جس کی وجہ سے

    دبئی آنے کے بَعْد محسن کو جو پہلی جاب ملی . وہ دبئی کے ایک ارب شیخ کے گھر میں نوکر کی جاب تھی

    اس گھر میں ویسے تو پہلے بھی تِین چار انڈین اور پاکستانی نوکر موجود تھے

    مگر وہ صاحب بڑی عمر کے مرد تھے

    محسن کو اِس گھر میں کام کرتے ہوئے آبھی دو دن ہی ہوئے تھے . کے گھر کی مالکان جو کے تقریباً 40 سال کی ایک بیوہ عرب عورت تھی . کی نظر محسن پر پڑ گئی

    اتنی عمر کی بیوہ ہونے کے باوجود محسن کو دیکھتے ہی اس عربی عورت کی بیوہ چوت میں ایک اگ سی سلگ اٹھی

    اور اگلی ہی شام اس عربی عورت نے محسن کو اپنے بیڈ روم میں بلا کر محسن سے اپنی پیاسی چوت کی آگ کو ٹھنڈی کروا لیا

    ایک تو محسن جوان تھا اوپر سے اس کا لورا موٹا ، لمبا اور کافی سخت تھا

    جس کی وجہ سے اس عربی عورت کو محسن کے ساتھ چدائی میں اتنا مزہ ملا کے اس نے پہلی ہی رات کے بَعْد محیسن کو اپنے ساتھ شادی کی آفردے دی

    محسن کوئی بوقوف انسان نہیں تھا . جو گرم پھدی کے ساتھ ساتھ پیسے اور دبئی کا ریزی ڈنس پرمٹ ایک ساتھ مل جانے کی آفر سے فائدہ نہ اٹھاتا

    اِس لیے محسن نئے فوراً ہاں کر دی اور یوں محسن ایک ہی مہینے میں گھر کے نوکر کی بجائے اب اسی گھر کا ملک بن بٹھا

    محسن کی عربی بِیوِی کا جگرہیپاٹائٹس سی بیماری کی وجہ خراب ہو رہا تھا . اور علاج کے باوجود اس عرب عورت کے بچنے کے چانس بہت ہی کام تھے

    مگر اِس کے باوجود جب تاک وہ عورت زندہ رہی . اس نے محسن کو اپنی گرم پھدی کے ساتھ ساتھ نا صرف اپنی بھاری گاند کے مزے بھی دئیے

    بلکہ مرنے سے پہلے وہ اپنی ساری جائِداد بھی محسن کے نام لکھ گئی . جس کی وجہ سے محسن راتوں رات امیر ہو گیا تھا

    اپنی عربی بیوی کے مرنے کے بعد جب محسن اپنے اتنے بڑے گھر میں اکیلا رہ گیا. تو محسن کو ایک دن بیھٹے بیھٹے اپنے گھر والوں کی اِس شدت سے یاد ستائ کے محسن نے اسی وقعت پاکستان میں اپنے گھر واپس لوٹنے کا اِرادَہ کر لیا

    Last edited by Story Maker; 06-02-2019 at 10:38 PM.

  2. The Following 11 Users Say Thank You to pajal20 For This Useful Post:

    abba (19-02-2019), abkhan_70 (22-01-2019), Admin (22-01-2019), asiminf (23-01-2019), hot_irfan (16-02-2019), irfan1397 (23-01-2019), ksbutt (22-01-2019), MamonaKhan (24-01-2019), Mirza09518 (23-01-2019), mmmali61 (22-01-2019), sajjad334 (22-01-2019)

  3. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Posts
    50
    Thanks Thanks Given 
    74
    Thanks Thanks Received 
    91
    Thanked in
    47 Posts
    Rep Power
    16

    Default

    Nice Start.......lagta hai bohat zabardast story chalnay wali hai. keep updating regularly.

  4. The Following 2 Users Say Thank You to sajjad334 For This Useful Post:

    hot_irfan (16-02-2019), pajal20 (24-01-2019)

  5. #3
    Join Date
    Jan 2009
    Posts
    88
    Thanks Thanks Given 
    179
    Thanks Thanks Received 
    191
    Thanked in
    76 Posts
    Rep Power
    20

    Default

    بھت شاندار سٹارٹ
    پلیز اپڈیٹ جلدی دینا

  6. The Following 2 Users Say Thank You to mmmali61 For This Useful Post:

    hot_irfan (16-02-2019), pajal20 (24-01-2019)

  7. #4
    Join Date
    Oct 2018
    Posts
    177
    Thanks Thanks Given 
    256
    Thanks Thanks Received 
    318
    Thanked in
    146 Posts
    Rep Power
    172

    Default

    کہانی کی اٹھان تو زبردست ہے۔
    اگلی قسط کا شدت سے انتظار ہے

  8. The Following 3 Users Say Thank You to irfan1397 For This Useful Post:

    hot_irfan (16-02-2019), mmmali61 (23-01-2019), pajal20 (24-01-2019)

  9. #5
    Join Date
    Oct 2018
    Location
    In husband ہارٹ.
    Posts
    109
    Thanks Thanks Given 
    911
    Thanks Thanks Received 
    201
    Thanked in
    92 Posts
    Rep Power
    12

    Default

    @pajal G


    زبردست زبردست زبردست زبردست زبردست زبردست زبردست

    Keep it up
    سیکسی لیڈی

  10. The Following 2 Users Say Thank You to MamonaKhan For This Useful Post:

    hot_irfan (16-02-2019), pajal20 (24-01-2019)

  11. #6
    Join Date
    Sep 2009
    Posts
    90
    Thanks Thanks Given 
    18
    Thanks Thanks Received 
    69
    Thanked in
    37 Posts
    Rep Power
    186

    Default

    Dosto aap main say kafi ko pata hai kay main nay is say pehlay ROMAN URDU FONT main likh kar kafi stories net par post ki hain.

    Chonkay URDU FONT main likhi gai khanai ko pernay ka apna aik alag maza hota hai.

    Is liy is baar mera irda tha. Kay main URDU FONT main koi story post karoon.

    Mujay urdu khanai likhnay ka choonkay koi tajerba nahi.

    Is liy main nay apni is story FARAR ko pehlay roman urdu main likha.

    Aur phir net par majood aik website www.ijunoon.com say apni is story ko Roman Urdu to Urdu Script Transliteration karnay ki try ki.

    Magar is koshish kay doran mujay yeh andaza huwa kay bay shaak yeh site kafi achi hai. Lakin is kay bawjod roman urdu say urdu script ko change kartay waqat kai jaga asal ilfaaz tabdeel nahi ho patay.

    Is kay bawjood main nay urdu fonts ko apnay laptop par download kar kay transliteration main honay wali mistake ho theek karnay ki try ki.

    Magar is kaam main story ka pehlay do hisay theek karnay main bi mera kafi waqat zaiya ho giya.

    Is liy apna kafi waqat is cheez par zaiya karnay kay bad mujay AFSOS say kehna paar raha hai kay main is story ko is waqat URDU SCRIPT main jari nahi rahakh paoon ga.

    Sahyaar nay shayed isi baray main kaha tha kay “

    یه عشق نہیں آسان ،بس اتنا سمج لیجئے
    گانڈ پھٹ جاتی ہے ظلمات سہتے سہتے

    Choonkay main yeh story ROMAN URDU main likh kar apnay pass save kar chukka hoon. Is liy aap logoon ko intzar ki musbat main dalnay ki bajaiy main is kahani ka ab ROMAN FONT walay hisay main post kar raha hoon.

    Main koshish karoon ga kay aik do din main baki sari story bi post kar doon. Ta kay story ka tasalsul na tutay aur aap loog bi story ko enjoy kar skain.

    Main nichay apnay naiy THREAD ka link post kar raha hoon. Aap main say jo dost isay perna chaiy wo is baiy thread par click kar kay story paar saktay hain.

    https://urdufunda.live/showthread.ph...******-KAHANI)


    Main anay apni taraf say koshish ki hai kay main aap kay liy koi achi story likh sakoon. Magar main nahi janta hai kay main apni is koshish main kitna kamyaab raha hoon.

    Chaaiy aap ko story achi lagay ya buri magar please apnay comments say apni raiay ka izhar zaror karain. Shukriya.

    [email protected]

  12. The Following 2 Users Say Thank You to pajal20 For This Useful Post:

    hot_irfan (16-02-2019), ksbutt (25-01-2019)

  13. #7
    Join Date
    Jul 2009
    Posts
    29
    Thanks Thanks Given 
    23
    Thanks Thanks Received 
    62
    Thanked in
    25 Posts
    Rep Power
    13

    Default

    جہاز میں بیٹھا محسن ابھی اپنی سوچوں میں ہی گم تھا کے اتنے میں جہاز کے وییلس نے لاہور ایئرپورٹ کے رَن وے کو ٹچ کیا .

    جہاز کے رَن وے پر لینڈ کرتے ہی اس میں بیٹھے محسن کا دِل زور زور سے دھڑکنے لگا اور اس کی آنکھوں میں آنسوں آ گئے .

    محسن چونکہ آج تقریباً 12 سال بَعْد یو اے ای سے پاکستان واپس لوٹا تھا اِس لیے اس کی آنکھوں میں آنے والے یہ آنسوں اصل میں خوشی کی آنسوں تھے جو اتنے سالوں بَعْد اپنے ملک واپس لوٹ نے کی وجہ سے اس کی آنکھوں میں آ گئے تھے .

    ویسے تو محسن کے پاس ایک چھوٹا سا بیگ ہی تھا جس میں اس کے دو تِین کپڑے ہی تھے مگر اِس کے باوجود اسے ایئرپورٹ سے نکلتے نکلتے شام کے تقریباً 5 بج گے .
    Last edited by Story Maker; 07-02-2019 at 08:53 PM.

  14. The Following 5 Users Say Thank You to lastzaib For This Useful Post:

    abba (19-02-2019), abkhan_70 (31-01-2019), hot_irfan (16-02-2019), ksbutt (19-02-2019), mmmali61 (01-02-2019)

  15. #8
    Join Date
    Dec 2010
    Posts
    660
    Thanks Thanks Given 
    116
    Thanks Thanks Received 
    923
    Thanked in
    535 Posts
    Rep Power
    76

    Default

    nice work keep it up friends

  16. The Following 2 Users Say Thank You to Story Maker For This Useful Post:

    abkhan_70 (07-02-2019), hot_irfan (16-02-2019)

  17. #9
    Join Date
    Feb 2010
    Posts
    144
    Thanks Thanks Given 
    1,075
    Thanks Thanks Received 
    212
    Thanked in
    92 Posts
    Rep Power
    25

    Default


    Ap bht zabardst or great writer ho UF ky

    Dear Pajal20 great hotest story share kill

    Ha ap ny parh kr full sawad aya . Ap aisy

    Hi apni great great stories likhty jaen .UFo

    Py Hackers k Hamly k bad chand writer

    Hazrat hi reh gae han ap un mai sy aik

    Ho . Yaha pehly waly members nai rahe

    Jo stories py comments krty thy or Thanks

    Py click krty thy . Kuch Waqt lagy ga UF koala

    Dobara set honny mai . Bass ap UF ka sath

    Mat Choreye ga . Ap ki New Hot or Zabardast

    Stories ka bechanni or bht Shiddatt sy intzaar

    Rehe ga ..Thanks Again . . .

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •