سب دوستوں سے اپیل ہے کے اردو فنڈا کو چلانے کے لیے ہمارا ساتھ دیں سب دوست اور اردو فنڈا کے چاہنے والے بڑھ چڑھ کر ڈونیشن دیں. آپ ایزی پیسہ اور پے پال سے پیسے بھیج سکتے ہیں
Contact
[email protected]

اردو فنڈا کے بہترین سلسلے اور ہائی کلاس کہانیاں پڑھنے کے لئے ابھی پریمیم ممبرشپ حاصل کریں . نیا سلسلہ بستی بستی گاتا جائے بنجارا ایڈمن کے قلم سے

Page 26 of 37 FirstFirst ... 1622232425262728293036 ... LastLast
Results 251 to 260 of 366

Thread: وہ بھولی داستان جو پھر یاد آگئی

  1. #251
    Join Date
    Nov 2018
    Posts
    239
    Thanks Thanks Given 
    92
    Thanks Thanks Received 
    1,010
    Thanked in
    234 Posts
    Rep Power
    178

    Default Update no 177..??



    سالی واقعی ھی پوری منی تنی استاد ھے ۔۔
    آنٹی مجھے کسنگ کےدوران کب ٹرائی روم سے باہر لے آئی اور کب میں الٹے قدموں سے چلتا ھوا باہر آیا مجھے تب پتہ چلا جب میری ٹانگوں کےساتھ صوفہ ٹکرایا اور میں پیچھے صوفے پر گرا آنٹی نے صوفے کے پاس لا کر میرے سینے پر دونوں ھاتھ رکھ کر مجھے پیچھے دھکا دیا تو میں صوفے پر گرتا گیا۔۔
    آنٹی نشیلی آنکھوں سے میری طرف دیکھتی ھوئی آگے بڑھی اور میری رانوں پر دونوں اطراف اپنی ٹانگیں رکھ کر بیٹھ گئی ۔
    اور میری گردن میں دونوں ہاتھ ڈال کر میرے اوپر ایسے جھک گئی جیسے ڈریکولا خون چوستا ھے آنے کے شارٹ کٹ ریشمی بالوں نے میرے چہرے کو دونوں اطراف سے ڈھانپ لیا اور آنٹی میرے کانوں کے نیچے میری گردن کے دونوں اطراف ھاتھ رکھ کر میرے ہونٹوں پر ہونٹ رکھ کر میرے ہونٹوں کو بےدری سے چوسنے لگ گئی ۔
    اور ساتھ ساتھ اپنی پھدی کو میرے لن کے اوپر رکھ کر پھدی سے لن کو رگڑنے لگ گئی آنٹی کے مموں کی نوک میرے سینے کے ساتھ ٹچ ھونے لگ گئیں ۔
    میں سالا اسکی عزت لوٹنے کا سوچ رھا تھا اور وہ رنڈی میری ھی عزت لوٹنے کے درپے تھی ۔
    اور میں معصوم بنا بیٹھا بس آنٹی کی کمر کو سہلا رھا تھا۔۔۔
    کچھ دیر یہ ھی سین چلتا رھا پھر آنٹی کو میرے ہونٹوں پر ترس آیا اور آنٹی میرے اوپر سے سیدھی ہوئی اور میری رانوں پر وزن ڈال کر بیٹھتے ھوے اپنے بالوں میں انگلیاں پھیر کر انکو درست کیا اور تھوڑا سا اوپر ھوئی اور اپنی شرٹ کو پکڑا کر اتار دیا افففففففففففففففف
    کیا نظارا تھا چٹے سفید دودھ کے پیالے ھاےےےےےےےے مممممممم
    کیا ھی پلے ھوے ممے تھے اس سے پہلے کے آنٹی شرٹ کو بازوں سے نکالتی میں بےصبروں کی طرح آنٹی کے مموں پر ٹوٹ پڑا اور دونوں مٹھیوں میں مموں کو دبوچ کر منہ مموں کی طرف بڑھایا اس سے پہلے کے میرا منہ مموں کے پاس جاتا آنٹی نے شرٹ اتار کر ایک طرف پھینکی اور پھر مجھ پر جھک کر اپنے دونوں بات میرے سر کے دونوں اطراف صوف پر رکھ دیے جس سے آنٹی کے بڑے بڑے ممے میرے منہ کے پاس خود ھی آگئے اور مموں نے میرے منہ کو آپنی آغوش میں لے لیا
    مموں کے درمیان میرا منہ تھا اور مموں نے میرے منہ پر چھاوں کی ہوئی تھی میں نے دونوں مموں کو مٹھیوں میں بھرا اور باری باری انکو چوسنے لگ گیا آنٹی منہ چھت کی طرف کئے سسکاریاں بھر رھی تھی ۔
    اور مموں کو میرے منہ پر دبا رھی تھی آنٹی کے ممے بہت ھی نرم تھے اور ان پر براون دائرے اور ان پر لگے دو انگور الگ ھی نظارا پیش کررھے تھے ۔
    میں ان موٹے اور تنے ھوے انگوروں کو منہ میں لے کر جتنی ذور سے چوستا آنٹی کے اندر اتنا ھی جوش بڑھتا ۔۔۔
    کافی دیر تک میں مموں کو چوستا رھا آنٹی ایک دفعہ مستی میں فارغ ھوتے ھوے مجھے دبوچ کر اپنی پھدی سے منی کا سیلاب نکال چکی تھی ۔
    کچھ دیر بعد آنٹی میرے اوپر سے اٹھی اور میرے قدموں میں بیٹھ گئی اور میرے ٹروازر کی ڈوری کے سرے کو پکڑ کر کھینچ دیا اور مجھے اوپر ہونے کا اشارہ کیا ۔
    میں نے گانڈ اوپر اٹھائی تو آنٹی نے میرا ٹراوزر کھینچ کر نیچے کیا اور میرے پیروں میں کر دیا میرا لن آزاد ھوتے ھی ہوا میں لہرایا آنٹی نے جب میرے موٹے ٹوپے اور تگڑے لن کو دیکھا تو آنٹی کی آنکھیں پھٹی کی پھٹی رھ گئی جیسے زندگی میں پہلی بار اتنا تگڑا لن دیکھ رھی ہو ۔
    آنٹی کتنی دیر میرے لن کو مٹھی میں بھر کر دیکھتی اور کبھی میری طرف اپنی پلکوں کو اٹھا کر دیکھتی رھی ۔
    میں نے خاموشی توڑی اور بولا آنٹی جی کیسا لگا ۔۔ آنٹی بڑی ستائش نظروں سے میری طرف دیکھ کر بولی واووووو امیزنگ یاسررر کیا ہتھیار ھے تمہارا اففففففف میں تو سپنے میں بھی اتنے بڑے لن کا کبھی سوچا نہیں تھا ۔
    میں نے کہا تو پھر اپنے اس سپنوں کے راج کمار کو پیار ھی کرلو آنٹی بولی کیوں نہیں اور یہ کہتے ھی آنٹی نے اپنی زبان منہ سے نکالی اور پیروں کے بل میرے قدموں میں بیٹھی میرے لن کے ٹوپے کے ہونٹوں پر زبان کی نوک پھیرنے لگ گئی اور پھر زبان کو ٹوپے کے چاروں اطراف پھیرتے ھوے ہوے پلکوں کو اٹھا کر میری طرف بھی دیکھتی جیسے آنکھوں کے اشارے سے پوچھ رھی ھو مزہ آرھا ھے ۔۔۔
    مزہہہہہ تو کیا میری ٹانگوں سے سارا خون میرے لن کی طرف دوڑ پڑا تھا ۔
    آنٹی بڑی مہارت سے میرے لن پر زبان پھیر رھی تھی ایک ہاتھ سے لن کو پکڑ کر کبھی اسطرف کرتے ھوے ٹوپے سے جڑ تک زبان پھیرتی تو کبھی لن کو دوسری طرف کر کے ٹوپے سے زبان پھیرتے ھوے زبان کو ٹٹوں تک لے جاتی ۔
    تو کبھی جتنا لن منہ میں لے سکتی اتنا لے کر چوستی میں آنکھیں بند کیے مزے سے سر کبھی صوفے کی بیک کے ساتھ مارتا تو کبھی دائیں بائیں مارتے ھوے سسکاریاں بھرتا آنٹی بڑی مہارت سے میرے لن کا چوپا لگا رھی تھی میرا آدھا لن آنٹی اپنے حلق تک لیجا کر اسے منہ میں رکھ کر جب چوستی تو مجھے ایسے لگتا جیسے میں ابھی فارغ ہونے لگا ہوں زندگی میں پہلی باری ایسا ایکسپرٹ چوپا لگانے والی آنٹی ملی تھی ۔
    آنٹی کوئی پندرہ بیس منٹ مسلسل لن کو ہر زاویعے سے چومتی چاٹتی رھی ۔۔۔
    میں تو بلکل چھوٹنے والا ہوگیا تھا آنٹی نے اس بار پھر لن کو منہ میں ڈالا اور ہلک تک کھینچ کر لے گئی بس مجھ سے برداشت نہ ھوا میں آگے کو جھکا اور آنٹی کے سر کو ذور سے پکڑا اور لن پر دبا دیا اور ساتھ ھی میرے لن سے منی کے فوارے چھوٹتے ھوے آنٹی کے گلے میں اترنے لگے جب لن نے پہلی پچکاری چھوڑی تو آنٹی نے سر کو اوپر جھٹکا دیا کہ لن منہ سے باہر آجاے مگر مرد کے اندر جتنا جوش اور جتنی طاقت چھوٹتے وقت آتی ھے اتنی طاقت عام حلات میں نہیں آتی ۔
    آنٹی کے سر کو دبا کر آنٹی کے جھٹکے کو وہیں دبا دیا اور ساری منی آنٹی کے منہ میں نکالی اور جیسے ھی میں نے آنٹی کا سر چھوڑا آنٹی نے جھٹکے سے لن منہ سے نکالا اور کھانستی ھوئی کچن کی طرف بھاگی ۔۔۔
    میں ادھر ھی بیٹھا لن کو آنٹی کی شرٹ کے ساتھ صاف کرنے لگ گیا۔۔۔
    چار پانچ منٹ کے بعد آنٹی منہ پر دونوں ہاتھ رکھے باہر نکلی اور بولی بتمیز بتا تو دیتے کہ فارغ ھونے لگے ھو اپنا سارا مال میرے منہ کے اندر ھی نکال دیا میں ایسے ھی نیم مرجھاے ھوے لن کے ساتھ اٹھا اور ٹراوز کو پاوں سے نکال کر ننگا ھی آنٹی کی طرف بڑھا اور انکو سینے کے ساتھ لگا کر سوری کرنے لگ گیا ۔
    کچھ دیر مسکے لگانے کہ بعد آنٹی کا موڈ سہی ھوا تو میں ایسے ھی آنٹی کو لے کر صوفے کے پاس آیا اور اسکو صوفے پر گرا کر اسکے اوپر جھک گیا اور مموں کو چوسنے لگ گیا کچھ ھی دیر میں میرا لن پھر ٹائٹ ھوگیا آنٹی کی اور میری ٹانگیں صوفے سے نیچے تھیں ۔۔
    میرا لن جب اپنے جوبن میں آیا تو میں کھڑا ھوا اور آنٹی کے ٹائٹس کو پکڑ کر کھینچنے لگا تو آنٹی نے نخرے کی فارمیلٹی پوری کرتے ھوے نہیں نہیں کرتے ھوے اپنے ٹائٹس کو پکڑ لیا مگر میں نے آنٹی کے ہاتھوں کو جھٹک کر ٹائٹس کھینچ کر اسکے پیروں سے نکال پھینکا اور آنٹی کی ٹانگوں کو اٹھا کر اسکو صوفے پر سیدھا لیٹایا اور خود بھی دوزانوں ہو کر آنٹی کی چکنی پھدی کے سامنے لن ہاتھ میں پکڑ کر بیٹھ گیا آنٹی کی پھدی پانی سے گیلی ہوچکی تھی اور بلکل ملائم بالوں سے پاک موٹی پھدی کو دیکھ کر میرا لن مذید جھٹکے کھانے لگ گیا۔۔


  2. The Following 6 Users Say Thank You to Xhekhoo For This Useful Post:

    abba (08-12-2018), abkhan_70 (06-12-2018), Lovelymale (07-12-2018), MamonaKhan (08-12-2018), Mirza09518 (07-12-2018), sexliker909 (08-12-2018)

  3. #252
    Join Date
    Nov 2018
    Posts
    239
    Thanks Thanks Given 
    92
    Thanks Thanks Received 
    1,010
    Thanked in
    234 Posts
    Rep Power
    178

    Default Update no 178..



    میں نے اپنی پوزیشن سنبھالی اور آنٹی کی دونوں پنڈلیوں کو پکڑ کر ٹانگوں کو ہوا میں کیا اور اپنے کندھوں پر رکھ لیا اور آنٹی کی ٹانگوں کو فولڈ کرتے ھوے اسکے کندھوں تک لے گیا۔۔۔
    اور ایک ہاتھ سے لن کو پکڑ کر پھدی کے موٹے اور گیلے لبوں میں پھیر کر لن کو پھدی کے پانی سے گیلا کیا اور ٹوپے کو پھدی کے لبوں میں سیٹ کرکے ایک جاندار گھسا مارا تو پہلے ھی گھسے میں لن آدھے سے ذیادہ پھدی میں اتر گیا جیسے ھی لن پھدی کے اندر گیا آنٹی نے دونوں ہاتھوں سے میری رانوں کو دبوچ کر ھاےےےےےےے مرگئی آہہہہہہہہہہہہہی
    یاسررررررر کے بچےےےےےےےےے آرام نال کر سارا ایییییی اندر کردتا اییییی
    میں نے لن کو تھوڑا سا پیچھے کھینچا اور یہ کہتے ھوے پھر ذوردار جھٹکے سے سارا لن جڑ تک اندر کردیا کہ آنٹی جی ابھی تو آدھا گیا ھے آدھا باقی ھے ۔ جیسے ھی لن کا ٹوپا آنٹی کی بچے دانی میں گھسا تو
    درد سے آنٹی کا رنگ سرخ ھوگیا اور آنٹی ھاےےےےےےے کرتی ھوئی سر دائیں بائیں مارنے لگ گئی ۔۔میں بغیر رکے گھسے مارنے لگ گیا آنٹی کی پھدی اندر سے کافی تنگ تھی پتہ نہیں کونسا نسخہ استعمال کرتی تھی سالی ۔
    آنٹی میرے ہر گھسے سے ھاےےےےےے ہولی کر ہاےےےےےے ہولیییییی
    کر رھی تھی میں مسلسل گھسے ماری جارھا تھا آنٹی کے ممے آنٹی کے سینے پر رقص کررھے تھے دس پندرہ منٹ میں اسی سٹائل میں انٹی کو چودتا رھا آنٹی فل مزے میں سسکاریاں بھر رھی تھی آنٹی نے میری رانوں کو چھوڑ کر اب میری کمر کے گرد بازو ڈال لیے تھے میرا ہر گھسا آنٹی کی بچے دانی تک زرب لگا رھا تھا آنٹی مزے لے لے کر چدوا رھی تھی اور ساتھ ساتھ یس یس یس فاسٹ فاسٹ کری جارھی تھی ۔
    آنٹی درد میں پنجابی اور مزے میں انگلش بولی جارھی تھی ۔
    آنٹی کی سیکسی آوازیں اور ڈانس کرتے ممے میرا جوش بڑھائی جارھے تھے ۔
    کچھ دیر مزید چودنے کے بعد آنٹی کی آہیں سسکیاں اور کم ان کم ان ایم کم ان کی آوازوں کے ساتھ آنٹی نے پھدی کو اوپر کر کے لن کو پورا ہضم کیا اور جھٹکے کھاتے ھوے فارغ ھوگئی میں نے کچھ دیر آنٹی کے جسم کے جھٹکوں کو رک کر انجواے کیا ۔
    آنٹی کی پھدی نے جب میرے لن کو بھینچنا کم کیا اور آنٹی لمبے لمبے سانس لینے لگ گئی
    میں نے لن باہر نکالا تو میرا لن آنٹی کی منی سے لتھڑا ھوا تھا ۔
    میں نے نیچے ہاتھ کر کے آنٹی کا ٹائٹس پکڑا اور لن کو صاف کرنے لگ گیا ۔
    آنٹی آنکھیں بند کیے لیٹی ھوئی تھی ۔۔۔
    میں صوفے سے نیچے اترا اور آنٹی کا بازو پکڑ کر آنٹی کو کھینچا تو آنٹی سوالیاں نظروں سے میری طرف دیکھتے ھوے اٹھی ۔
    میں نے آنٹی کو کھڑا کیا اور صوفے کے کنارے کے پاس لیجا کر آنٹی کا منہ دوسری طرف کر کے آنٹی کو جھکنے کا کہا آنٹی بغیر کچھ کہے گانڈ میری طرف کر کے ضوفے کے اوپر ہاتھ رکھ کر گھوڑی سٹائل میں جھک گئی آنٹی کی گانٹ میرے سامنے تھی
    میں تھوڑا سا نیچے کو ہوا اور گانڈ کے دراڑ کو کھول کر آنٹی کی موری دیکھنے لگ گیا اورانگلی آنٹی کی گانڈ کی موری کے اوپر رکھ کر موری کو مسلنے لگ گیا آنٹی جھٹکے سے سیدھی ھوئی تو میرا انگلی آنٹی پھاڑیوں میں پھنس گی آنٹی نے بھی پورے ذور سے گانڈ کو بھینچ کر انگلی کو سزا دی ۔۔
    آنٹی سیدھی ھوتے ھی میری طرف دیکھ کر بولی یہ کیا کر رھے ھو ۔
    میں نے کہا کچھ بھی نہیں ۔
    اور آنٹی کو پھر اسی پوزیشن پر کرنے کے لیے آنٹی کی کمر کو دبایا تو آنٹی جھکتے ھوے بولی یاسر پیچھے سے نہ کرنا۔۔
    تمہارا اتنا بڑا مجھ سے برداشت نہیں ہونا میں نے کہا نہیں کرتا الٹی تو ھوجاو ۔
    آنٹی پھر گھوّڑی بن کر گانڈ کو مٹکاتے ھوے میرے لن کے سامنے سیٹ کرنے لگ گءی ۔
    میں نے ٹانگوں کو تھوڑا سا خم کیا اور لن کو پکڑ کر پھدی کے لبوں میں اڈجسٹ کرکے آنٹی کی کمر کو پکڑ کر گیلی پھدی میں لن اتار دیا
    آنٹی نے سر اوپر اٹھا کر ھاےےےےےےےے کیا اور ساتھ ھی سییییییییی کی آواز نکال کر ایک ہاتھ پیچھے میری ران پر رکھ کر بولی آرام سے نہیں کیا جاتا، ۔
    ایک ھی بار میں جان نکال دیتے ھو ۔۔
    میں نے آنٹی کی گانڈ پر ہاتھ پھیرتے ھوے آنٹی کو تسلی دی اور پھر کمر کو پکڑ کر پیچھے سے گھسے مارنے لگ گیا آنٹی آہہہہہہہ افففففف مممممم. کی آوازیں نکال رھی تھی اور میری جاندار گھسوں کی وجہ سے آنٹی کے ممے اسکے منہ کی طرف اچھل اچھل کر جارھے تھے پیچھے سے آنٹی کی گانڈ میرے گھسے سے چھلک چھلک جارھی تھی ۔
    مزے کی انتہا تک مجھے سرور آرھا تھا آنٹی کی سسکیاں آہیں اور تھپ تھپ کی آوازیں میرے مزے کو دوبالا کررھیں تھی ۔۔
    میں مسلسل ایک ردھم میں آنٹی کو چودے جار رھا تھا دس منٹ مذید چودنے کے بعد آنٹی کی پھدی نے پھر منی نکال دی اور آنٹی گانڈ پیچھے کو نکالے صوفے کے بازوں کے اوپر ھی ممے رکھ کر ڈھیر ھوگئی میں نے لن باہر نکالا تو میرا لن پھر منی اور پانی سے لتھڑا ھوا تھا آنٹی کے جھکنے کی وجہ سے آنٹی کی گانڈکا سوراخ بلکل میرے سامنے تھا اور سوراخ بھی گیلا ھوچکا تھا میں نے موقع ضائع کیے بغیر گیلے لن کو سوراخ پر رکھا اس سے پہلے کہ آنٹی کچھ سمجھتی ہے ا اٹھنے کی کوشش کرتی میں نے آنٹی کی کمر پر دونوں ھاتھ رکھ کر دبایا اور گھسا مار کر لن گانڈ میں اتار دیا ۔۔۔۔۔۔
    جیسے ھی لن نان سٹاپ آنٹی کی گانڈ میں گھسا آنٹی باکاں مارن لگ گئی ۔
    نال ای پنجابی کا نزول ھوا ۔
    آنٹی کے منہ سے چیخ نکلی
    اور ساتھ ھی آنٹی بولی ۔۔
    ہاےےےےےےےےےے میریییییییی بنڈ پاڑ دتی اووووو کنجرا ھاےےےےےے وےےےے تیرا ککھ نہ روے کی کردتا ای ظالماں
    ھاےےےےےے نی میریے مائیں ھاےےےےےےےے میں مرگئی
    پچھے ہٹ جا کھوتےدے لن والیا
    ھاےےےےےےے۔
    آنٹی کا برا حال تھا شاید پہلی دفعہ لن گانڈ میں لیا تھا آنٹی جتنا ذور اوپر کو اٹھنے کے لیے لگاتی میں اتنا ھی ذور سے آنٹی کو نیچے دبا دیتاااااا۔۔
    آنٹی مجھے پنجابی میں ھی بد دعائیں دیتی ھاےےے مر گئی کری جا رھی تھی ۔
    میں نے لن باہر نہ نکالا اور ایک ہاتھ آگے کر کے آنٹی کی گردن پر رکھا اور آنٹی کے سر کو صوفے کے فوم پر دبا دیا جس سے آنٹی کی آوازصوفے میں ھی دب گئی ۔۔۔
    اور میں نے ساتھ ھی گھسے مارنے شروع کردیے مجھ میں پتہ نہیں کہاں سے اتنا جنون آگیا اور میں آنٹی کو نیچے دباے اسکی بُنڈ مارے جارھا تھا اور آنٹی کی غوں غوں کی آوازیں آرہیں تھیں آنٹی نے لاکھ کوشش کی کہ میرے نیچے سے نکل جاے مگر میں نے اسے جکڑا ھی اسطرح تھا کہ بچاری ہلنے سے قاصر تھی ۔۔
    میں بڑی بے دردی سے گھسے ماری جارھا تھا آنٹی نڈھال ہوکر اوندھی لیٹی سسکیاں لے کر رو رھی تھی مگر میں پورے جوش سے اسکی بُنڈ کی دھجیاں اڑا رھا تھا ۔۔


  4. The Following 7 Users Say Thank You to Xhekhoo For This Useful Post:

    abba (08-12-2018), abkhan_70 (06-12-2018), Admin (07-12-2018), Lovelymale (07-12-2018), MamonaKhan (08-12-2018), Mirza09518 (07-12-2018), sexliker909 (08-12-2018)

  5. #253
    Join Date
    Nov 2018
    Posts
    239
    Thanks Thanks Given 
    92
    Thanks Thanks Received 
    1,010
    Thanked in
    234 Posts
    Rep Power
    178

    Default Update no 179..



    بیس منٹ مسلسل آنٹی کی گانڈ چدتی رھی آنٹی سسکتی رھی بلکتی رھی مگر اسکی سسکیوں میں مجھے مزہ آرھا تھا، میں گھسے پر گھسا ماری جارھا تھا آنٹی کی بنڈ کی موری بھی کافی کھل چکی تھی میرا لن ایسے روانی سے چل رھا تھا جیسے اسکی پھدی کو چود رھا ہوں بنڈ اور پھدی میں فرق ختم ھو چکا تھا آنٹی کا احتجاج تمام شد ھوچکا تھا کہ میرے ٹانگوں سے ساراخون میرے لن کی طرف تیزی سے دوڑنے لگا میرے گھسوں کی سپیڈ تیز سے تیز تر ہوتی ہوگئی میرے جسم سے پسینہ آنٹی کی کمر پر گرنے لگا آنٹی نیم بے ہوشی میں گئی میرے آخری گھسے نے آنٹی کو ہوش میں لایا ادھر میرا آخری گھسا انتہائی جاندار تھا ادھر آنٹی کے منہ سے ھاےےےےےےے نکلا
    ادھر میرے لن سے بنڈ میں منی کا فوارہ نکلا ۔
    اور آنٹی کی ہودی کو بھرتا گیا بھرتا گیا میں نڈھال ھوکر آنٹی کے اوپر گر گیا ۔۔۔آنٹی کو ہوش آیا آنٹی نے غصے سے مجھے پیچھے دھکا دیا اور ساتھ ہی پلٹ کر صوفے پر گر گئی اور دونوں ہاتھ اپنی گانڈ کے نیچے رکھ کر ایسے مچلنے لگ گئی جیسے اسکی گانڈ میں کسی نے مرچیں ڈال دی ہوں ۔۔۔میں دھکا لگنے سے پیچھے ہوکر کھڑا آنٹی کے تڑپنے کا نظارہ دیکھ رھا تھا میری جیسے ھی نظر سامنے دیوار پر پڑی میں تو ایکدم۔۔۔۔۔؟؟؟؟؟


  6. The Following 10 Users Say Thank You to Xhekhoo For This Useful Post:

    abba (08-12-2018), abkhan_70 (06-12-2018), irfan1397 (06-12-2018), Kashifpota (06-12-2018), love 1 (06-12-2018), Lovelymale (07-12-2018), MamonaKhan (08-12-2018), Mirza09518 (07-12-2018), sexliker909 (08-12-2018), windstorm (07-12-2018)

  7. #254
    Join Date
    Nov 2018
    Posts
    239
    Thanks Thanks Given 
    92
    Thanks Thanks Received 
    1,010
    Thanked in
    234 Posts
    Rep Power
    178

    Default

    Quote Originally Posted by Admin View Post

    واہ کیا بات ہے کہانی میں ٹوسٹ بڑھتا جا رہا ہے اور کیا بات ہے شیخو کہانی اپ ڈیٹ کرنے کے سپیڈ کم ہو گئی ہے سب کو نشہ پر لگا کر اب ایسا نہ کرو . میرے سمیت سب کو اپ ڈیٹ کا شدت سے انتظار رہتا ہے



    سر سٹوری پسند کرنے اور میری حوصلہ افزائی کرنے کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتا
    باقی سر ایک پرابلم ھے
    اپڈیٹ لمیٹڈ اہلوڈ ہوتی ھے اگر لمبی اپڈیڈ کروں تو وہ پینڈنگ رہتی ھے ۔
    ہلیز رہنمائی درکار ہے شکریہ


  8. The Following 2 Users Say Thank You to Xhekhoo For This Useful Post:

    irfan1397 (06-12-2018), sexliker909 (08-12-2018)

  9. #255
    Join Date
    Jul 2009
    Posts
    19
    Thanks Thanks Given 
    21
    Thanks Thanks Received 
    38
    Thanked in
    17 Posts
    Rep Power
    12

    Default

    جیسے ھی میرے لن نے انگڑائی لی میں نے بھی ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر سالے کی گِچی مروڑ دی ۔

    Kia khoobsoorat baat kahi hay

  10. The Following 2 Users Say Thank You to lastzaib For This Useful Post:

    sexliker909 (08-12-2018), Xhekhoo (06-12-2018)

  11. #256
    Join Date
    Oct 2018
    Posts
    128
    Thanks Thanks Given 
    187
    Thanks Thanks Received 
    214
    Thanked in
    100 Posts
    Rep Power
    167

    Default


    شیخو جی ، بہت ہی زبردست لاجواب اور سیکسی اپڈیٹ دی ہے ،
    اور آخر میں سسپنس

    مزا آگیا
    اگلی قسط کا انتظار رہے گا

  12. The Following 2 Users Say Thank You to irfan1397 For This Useful Post:

    sexliker909 (08-12-2018), Xhekhoo (06-12-2018)

  13. #257
    Join Date
    Nov 2018
    Posts
    239
    Thanks Thanks Given 
    92
    Thanks Thanks Received 
    1,010
    Thanked in
    234 Posts
    Rep Power
    178

    Default Update no 180



    میری نظر جیسے ہی سامنے دیوار پر لگے کلاک کی طرف پڑی تو میں حیران رھ
    گیا کہ مجھے تین گھنٹے ہوگئے ہیں ۔
    بارہ بجنے والے تھے ۔
    میں نے جلدی سے ٹراوزر پہنا اور اپنا حلیہ درست کرنے لگ گیا تب تک آنٹی بھی اٹھ کر اپنا ٹائٹس پہن کر شرٹ پہن چکی تھی ۔
    آنٹی سے کھڑا نہیں ہوا جارھا تھا ۔
    آنٹی مجھے گھورے جارھے تھی ۔
    میں آنٹی کے قریب آیا اور آنٹی کو کندھوں سے پکڑنے لگا تو آنٹی نے غصے سے میرے ہاتھ جھٹک دیے اور میری طرف غصے سے دیکھتے ھوے بولی کردی نہ وہ ھی پینڈؤں والی حرکت تم لوگ کبھی نہیں سدھر سکتے پینڈو کے پینڈو ھی رھو گے نانسینس ۔
    میں نے کہا آنٹی جی سوری وہ دراصل ۔۔۔۔۔آنٹی غصے سے میری بات کاٹ کر بولی بولی شٹ اپ بلیڈی فول گیٹ لوسسسسسس
    آنٹی کی انگلی دروازے کی طرف تھی ۔
    میں نے کہا آنٹ۔۔۔۔۔۔۔
    آنٹی کا پارہ مذید چڑھ گیا
    آنٹی نے ایک ھاتھ اپنی گانڈ پر رکھا ہوا تھا اور دوسرے ھاتھ کی انگلی دروازے کی طرف تھی
    میرے منہ سے ابھی آنٹ ۔۔۔۔۔۔ھی نکلا تھا کہ آنٹی غصے سے دھاڑی آئی سے گیٹ لوسسسسسسس میں سرجھکا کر دروازے کی طرف چل دیا اور جب میں نے مڑ کر دیکھا تو آنٹی نے دونوں ھاتھوں سے اپنی گانڈ کو پکڑ رکھا تھا میں نے دروازے کے پاس پہنچ کر آنٹی کی طرف دیکھا اور بولا آنٹی جی سوریییی
    آنٹی اپنی گانڈ کو پکڑے تکلیف زدہ منہ بناے ھوے پھر بولی دفعہ ہوجاؤووووو
    میں سر جھٹک کر دروازہ کھول کر باہر نکل گیا ۔
    جب میں بوتیک سے باہر نکلا تو بوتیک کے سامنے والی دکان والے نے چونک کر میری طرف دیکھا میری جب اس کی نظر سے نظر ملی تو اس نے بڑی طنزیہ مسکراہٹ کے ساتھ مجھے دیکھ کر منہ دوسری طرف کر لیا ۔۔
    میں اسے دیکھتے ھوے مارکیٹ سےباہر نکلا اور کچھ دیر ادھر ادھر پھرتا رھا ۔
    مجھے بھوک سی محسوس ہوئی میں نے ہوٹل کا رخ کیا اور جس ہوٹل سے ہم روز کھانا لینے جاتے تھے میں اسی ہوٹل پر پہنچا ہوٹل والا میرا واقف تھا اس سے سلام دعا کے بعد میں اندر ہوٹل میں چلا گیا اور ہوٹل کے واش روم گھس کر اپنا نچلا حصہ اچھی طرح دھویا اور پھر منہ ہاتھ دھو کر میں کھانے کا آڈر دے کر ٹیبل پر بیٹھ گیا ۔
    کچھ دیر بعد کھانا آگیا میں کھانا کھانے میں مصروف ہوگیا ۔
    ابھی میں کھانا کھا ھی رھا تھا کہ جنید میرے سامنے کرسی پر آکر بیٹھ گیا اسے یوں اچانک دیکھ کر میں چونک گیا ۔
    اور پھر میں اٹھ کر اس سے گلے ملا اور کافی گرمجوشی سے ملنے کے بعد ایک دوسرے سے باتیں کرنی شروع کردیں ۔
    جنید بولا یاسر اس گانڈو کو چھوڑنا نہیں ھے میں جانتا ہوں اسے اسکا نام نسیم ھے اور وہ ہمارے محلے کا ھی ھے
    میں نے کہا تو ٹینشن نہ لے آج اسکا کام ھوجانا ھے ۔
    جنید خوش ہوکر بولا کس ٹائم مجھے بھی بتا میں بھی اپنے ھاتھ گرم کرلوں گا ۔۔
    میں نے کہا نہیں یار تیرا محلے دار ھے بعد میں تجھے کوئی پریشانی نہ ھو اس لیے تو اس معاملے میں نہ پڑ میں اکیلا ھی کافی ہوں اس کے لیے ۔
    جنید بولا ۔
    لن تے چڑے محلے داری ۔
    میرا لن وڈ لے بعد وچوں
    میں کیڑا کمیاں دا بال آں ۔
    میں نے کہا یار تیری یہ ھی مہربانی کہ تو نے کہہ دیا تم نے اسکا تماشا دیکھنا ھے تو چھ بجے اسکی دکان سے کچھ فاصلے پر کھڑے ہوکر اس کی چھترول دیکھ لینا ۔
    جنید بولا ۔
    یار تم مجھے اس لائک نہیں سمجھتے میں نے کہا چھڈ یار توں اپنا جگر ایں کنج دیاں گلاں کرن دیاں ایں ۔
    جنید بولا پھر جو مجھ سے ھوگا میں کروں گا ۔
    میں نے کہا یار وہ انکل تجھے بھی نہ نکال دے جنید بولا لن تے چڑے ہور دکاناں تھوڑیاں نے ۔
    نالے میرا تیرے بغیر ہن دل وی نئی لگنا اس دکان تے
    میں نے کہا چل ٹھیک ھے تم صرف میرے دوستوں کے پاس کھڑے رہنا اگر کوئی اور بیچ میں آیا تو تم اسکو سنبھال لینا ۔
    میں نے جنید کو اپنے دوستوں کے بارے میں بتایا۔
    اور ساری بات سمجھا دی ۔
    جنید مذید کچھ دیر بیٹھنے کے بعد چلا گیا ۔
    میں مذید ایک گھنٹہ ادھر ھی بیٹھا ٹی وی دیکھتا رھا ۔اور بار بار کلاک کی طرف نظر دوڑاتا رھا
    وقت تھا کہ گزرنے کا نام ھی نہیں لے رھا تھا ۔
    پانچ بجے میں ہوٹل سے نکلا اور پھر بازار کی طرف چل دیا۔۔
    بازار میں ادھر ادھر گھومتا رھا ۔
    اور پھر پارلر کی طرف چل دیا
    میں شاہین مارکیٹ سے ابھی تھوڑا پیچھے ھی تھا کہ مجھے سامنے سے شادا اور میرے باقی کے دوست جو کل ملا کر سات آٹھ تھے ۔آتے ھوے دیکھائی دئیے ۔
    شادا مجھے دیکھتے ھی دور سے بھڑک مار کر باہیں کھول کر میری طرف ایسے بڑھا جیسے سالا برسوں بعد مل رھا ھو ۔
    شادا جب میرے قریب پہنچا تو گلے ملتے ھوے میں نے اسے کہا سالیا بازار اے پنڈ دیاں گلیاں نئی جیڑا بڑکاں مارنا پیا سو
    شادا بولا
    پین دا پھدا کسے دا جیڑا ساڈے ول اکھ چُک کے وی ویکھے ۔
    میں نے کہا
    گانڈو صبر رکھ پیلے ای سارا کم نہ خراب کردیوں ۔
    کچھ دیر ہم ادھر ھی کھڑے باتیں کرتے رھے ۔
    میں نے اسے اور باقی دوستوں کو جنید کے بارے میں بتایا اور اس کا حلیہ بھی سمجھا دیا ۔
    مجھے یہ ڈر تھا کہ یہ سالے کہیں اسے ھی نہ پھینٹ دیں اس لیے انکو جنید کے بارے میں آگاہ کردیا۔۔۔
    میں نے ٹائم دیکھا تو چھ بجنے میں پندرہ منٹ رھ چکے تھے میں ۔
    نے انکو لوکیشن سمجھائی کہ کدھر کھڑے ھونا ھے اور پھر میں انکو ادھر ھی چھوڑ کر شاہین مارکیٹ کی طرف چل دیا۔۔
    میں جیسے ھی مارکیٹ کے پاس پہنچا وہ میرا سالا دکان کے باہر کھڑا تھا مجھے دیکھ کر طنزیہ انداز میں ہنسا میرے چلتے قدم اسکی مسکراہٹ دیکھ کر رک گئے میں اسکی طرف بڑھنے ھی لگا تھا کہ۔۔۔۔۔

  14. The Following 11 Users Say Thank You to Xhekhoo For This Useful Post:

    abba (08-12-2018), abkhan_70 (06-12-2018), farooq1992 (07-12-2018), irfan1397 (06-12-2018), love 1 (07-12-2018), Lovelymale (07-12-2018), MamonaKhan (08-12-2018), Mirza09518 (07-12-2018), sexliker909 (08-12-2018), Story Maker (06-12-2018), windstorm (07-12-2018)

  15. #258
    Join Date
    Dec 2010
    Posts
    572
    Thanks Thanks Given 
    38
    Thanks Thanks Received 
    342
    Thanked in
    211 Posts
    Rep Power
    66

    Default

    awesome story

  16. The Following 2 Users Say Thank You to Story Maker For This Useful Post:

    sexliker909 (08-12-2018), Xhekhoo (06-12-2018)

  17. #259
    Join Date
    Apr 2009
    Posts
    6
    Thanks Thanks Given 
    3
    Thanks Thanks Received 
    8
    Thanked in
    3 Posts
    Rep Power
    11

    Default

    Lajawab storyyyyyyyyyyyyyyyy

  18. #260
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    In Your Heart
    Posts
    1,145
    Thanks Thanks Given 
    122
    Thanks Thanks Received 
    145
    Thanked in
    55 Posts
    Rep Power
    1537

    Default

    Quote Originally Posted by Xhekhoo View Post


    سر سٹوری پسند کرنے اور میری حوصلہ افزائی کرنے کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتا
    باقی سر ایک پرابلم ھے
    اپڈیٹ لمیٹڈ اہلوڈ ہوتی ھے اگر لمبی اپڈیڈ کروں تو وہ پینڈنگ رہتی ھے ۔
    ہلیز رہنمائی درکار ہے شکریہ

    yaar batao kia masla aa raha hai. Screen shot bejh do whatsapp pe ke kia error aa raha hai limited ka

  19. The Following 2 Users Say Thank You to Admin For This Useful Post:

    sexliker909 (08-12-2018), Xhekhoo (07-12-2018)

Tags for this Thread

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •